متعلقہ

بطور اکیلی ماہ کئی صدموں سے گزری ہوں، متھیرا – پاک لائیو ٹی وی


بطور اکیلی ماہ کئی صدموں سے گزری ہوں، متھیرا

پاکستان شوبز انڈسٹری کی معروف ماڈل، اداکارہ و میزبان متھیرا نے کہا ہے کہ میں نے بطور اکیلی ماہ معاشرے کا دباؤ برداشت کیا ہے اور کئی صدموں سے گزری ہوں۔

حال ہی میں اپنے دیے گئے ایک انٹرویو میں متھیرا کا کہنا تھا کہ طلاق ہو جانے کے بعد آپ اچھے والدین کی طرح اپنے بچوں کی پرورش کر سکتے ہیں مگر ایسا ہوتا نہیں، طلاق کے بعد میاں بیوی کا رشتہ ختم ہو جاتا ہے اور بچوں کی ساری ذمہ داری کسی ایک پر آن پڑتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ میں نے بطور اکیلی ماں بہت جدوجہد کی ہے، جب آپ کو اکیلی ماں کے طور پر بچے پالنے پڑتے ہیں تو آپ خود کو سخت بنا لیتے ہیں، عورت کو مرد بننا ہی پڑتا ہے، پھر ایسی خواتین کو معاشرہ ’غنڈی‘ اور ’بدتمیز‘ کہہ کر پکارتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ میں اپنے ہاں تیسرے بچے کی پیدائش کے بعد ڈپریشن سے بھی گزری۔

متھیرا نے بتایا کہ بچے کی پیدائش کے بعد خواتین کو ڈپریشن کی کیفیت سے گزرنا پڑتا ہے، لوگ اسے کبھی سنجیدگی سے نہیں لیتے ہیں، یہ ایک حقیقی مسئلہ ہے مگر ہمارے معاشرے میں کہا جاتا ہے کہ عورت نخرے کر رہی ہے۔